آپ کیا کہتے ہیں

جیسا کہ تصویر میں صاف طور پر دیکھا جا رہا ہے کہ ایک نوجوان لڑکا اور لڑکی ایک دوسرے کو گلے لگا کر کھڑے ہیں، ارد گرد پھولوں کی پتیاں بکھری ہیں اور کچھ نوجوان حضرات اپنے موبائل سے یہ سارا منظر ریکارڈ کر رہے ہیں۔ یہ جگہ کوئی عام جگہ نہیں ہے بلکہ “یونیورسٹی آف لاہور ہے۔” اور یہ نوجوان کوئی عام نوجوان نہیں ہیں بلکہ قوم کا مستقبل اور اثاثہ ہیں یعنی “طلباء کرام” ہیں ۔

اور یہ لڑکا اور لڑکی کوئی شادی شدہ جوڑا نہیں ہیں۔ بلکہ دو چاہنے والے ہیں۔ اور یہ سب لوگ مل کے اسلامی جمہوریہ پاکستان کے ایک نامور اعلیٰ تعلیمی ادارے میں کھڑے ہو کر سرے عام مغربی ثقافت کو فروغ دے رہے ہیں۔ اور دوسرے طلباء انکے اس کام پر مکمل حوصلہ افزائی کر رہے ہیں ۔ اور یہ بھی نہیں پتا کہ اور اس سارے ہونے والے کام کو “پروپوزل” کا نام دیا گیا ہے اب یہ بھی نہیں پتا کہ یہ پروپوزل نکاح کا ہے یا زنا کا۔

البتہ مجھے اس بات سے کچھ فرق نہیں پڑتا کہ کون کیا کر رہا ہے۔ کیونکہ ہر بندے نے اپنا حساب خود دینا ہے۔

مگر مجھے اس بات سے فرق پڑتا ہے کہ جب میرے مذہب اسلام کا مزاق اڑایا جائے یا میرے ملک میں جس ملک کو نفاذ اسلام کیلئے حاصل کیا گیا وہاں مسلمان نوجوانوں سرے عام گناہ کریں ، انگریز کی ثقافت کو فخر سے فروغ دیں اور طلباء کرام اسکو پروموٹ کریں اور آزاد خیال ( نیم بغیرت) لوگ اسکو پیار کے اظہار کا نام دیں۔

مجھے اعتراض ہے اس بات پر کہ میرے ملک کے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں مغربی ثقافت کو پروموٹ کیا جائے اور انتظامیہ خاموش رہے۔

مجھے اعتراض اس بات پر ہے کہ میرے ملک کے مسلمان نوجوان بنا نکاح کے سرے عام گلے ملیں اور اسکو آزاد خیالی کہا جائے۔

نوٹ:

پیار کرنا جرم نہیں ہے ، شادی کا پروپوزل دینا بھی غلط نہیں ہے البتہ بنا نکاح کے لڑکے اور لڑکی کا یوں ملنا شرمناک ہے۔ خدارا اسلام پسند بنیں اور جو طریقہ کار آپ کو دیا گیا ہے نکاح کرنے کیلئے اس پر عمل کریں۔

میں ان لوگوں کو کوئی لعنت نہیں بھیج رہا۔ اور نا ہی مجھے ان سے کوئی نفرت ہے اور نا ہی انکے لیئے کو بدعا ہے۔ میری دعا ہے اللہ پاک انکی محبت کو نکاح تک پہنچائے۔ مگر یہ طریقہ کار غیر شرعی ہے اور غیر اخلاقی ہے اور میں اسکی مخالفت کرتا ہوں۔

باقی تصویر غیر اخلاقی تھی اس لیے نہیں لگائی ہے اور ویسے بھی سب نے وہ تصویر باقی والز پر دیکھی ہوگی

اگر متفق ہیں تو شئیر کریں، نیز اپنی رائے بھی دیں۔

شکریہ۔ اللہ پاک ہم سب کو دین اسلام سمجھنے کی توفیق عطا فرمائے آمین

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *